Latest News

خاندانی راج ملک کی ترقی میں رُکاوٹ ۔ وزیر اعظم نریندر مودی کا بہار میں خطاب کشمیری الگاﺅ وادیوں کو کانگریس نے میز پر بلا کر ان کی مہمان نوازی کی اور مودی نے انہیں جیل کی ہوا کھلائی

WebDesk

خاندانی راج ملک کی ترقی میں رُکاوٹ ۔ وزیر اعظم نریندر مودی کا بہار میں خطاب

کشمیری الگاﺅ وادیوں کو کانگریس نے میز پر بلا کر ان کی مہمان نوازی کی اور مودی نے انہیں جیل کی ہوا کھلائی

 

وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ پاکستان کے خلاف پہلے سرجیکل سٹرائک پھر ائر سٹرائک کرنے کا دم کانگریس میں نہیں بلکہ بھارتیہ جنتا پارٹی کی سرکار میں تھا جس نے کشمیر میں مارے گئے فوجی جوانوں کا بدلہ پاکستان سے لیا ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس جو کل تک ائر سٹرایک کے ثبوت مانگ رہی تھی آج خاموشی کیوں ہے ؟۔ اسلئے کہ کانگریس کے نیتاﺅں کو سمجھ آگیا ہے یہاں اب ان کی دال گلنے والی نہیں ہے ۔ نریندر مودی نے کہا کہ کشمیر میں الگاﺅ وادیوں پر کس نے نکیل کس لی یہ سبھی جانتے ہیں ۔ کانگریس نے ان کو میزوں پر بلاکر ان کی خاطر داری کی مودی نے ان کو جیل کی ہوا کھلائی ۔ دریں اثناءمودی نے ایک نیشنل انگریزی رونامہ کو انٹرویو میں کہا ہے کہ اگر ممبئی حملے کے بعد پاکستان کے خلاف کارراوئی کی گئی ہوتی تو پلوامہ حملہ نہیں ہوگیا ہوتا۔ انہوںنے کہاکہ بھارت کےلئے کشمیری عوام کےلئے ہیلنگ ٹچ ہے مگر علیحدگی پسندوں اور ملٹنٹوں کےلئے نہیں ، ان کے خلاف سخت سے سخت کارروائیاں جاری رہیں گی ۔ کرنٹ نیوز آف انڈیاکے مطابق وزیر اعظم نریندر مودی نے بہار کے ارریہ ضلع میں ایک چناوی جلسے سے خطاب کے دوران کانگریس پر حملوں کی بوچھاڑ کرت ہوئے کہا کہ بٹلہ ہاﺅس میں اشدت پسندوں کے خلاف کارروائی کے وقت کانگریس کے لیڈران کی آنکھوں سے آنسو نکلے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر ی اولگاﺅ وادیوں کوکانگریس نے میز پر بلاکر ان کی مہمان نوازی میں کوئی کسر باقی نہیں رکھی تھی۔ طرح طرح کے وینجن پروسے گئے لیکن بھاجپا سرکار نے ملک کے دشمنوں کو جیل کی ہوا کھلائی ۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کے بالاکوٹ میں کی گئی ائر سٹریک پر کل تک کانگریس ثبوت مانگ رہی تھی آ ج یہ لوگ چپ سادھے ہوئے ہیں ۔ انہوںنے کہا کہ پاکستان کے خلاف پہلے سرجیکل سٹرائک پھر ائر سٹرایک کا دم بھاجپا سرکار میں ہی تھا کانگریس میں اتنی ہمت نہیں ۔ سی این آئی کے مطابق مودی نے دوران خطاب لوگوں نے کہا کہ اب آپ لوگ فیصلہ کریں کہ آپ کو کون چاہئے دیش کو دشمنوں کے حوالے کرنے والی کانگریس یا دیش کی طرف میلی آنکھوں سے دیکھنے والوں کے خلاف کارروائی کرنے والی بھاجپا سرکار چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ پچھلے ستھر برسوں میں کانگریس نے جو ترقیاتی کام انجام دیئے مودی سرکار نے اس سے دوگنے کام محض پانچ برسوں میں انجام دئے گئے ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ملک کو اب خاندانی راج کی ضرورت نہیں ہے خاندانی راج غریبوں کا خون چوستا ہے چاہئے جموں و کشمیر میں خاندانی راج ہو یا ملک کی دوسری ریاستوں میں ہو۔ خاندانی راج ملک کی ترقی کی رُکاوٹ ہے ۔ دریں اثناءمودی نے ایک نیشنل انگریزی رونامہ کو انٹرویو میں کہا ہے کہ اگر ممبئی حملے کے بعد پاکستان کے خلاف کارراوئی کی گئی ہوتی تو پلوامہ حملہ نہیں ہوگیا ہوتا۔ انہوںنے کہاکہ بھارت کےلئے کشمیری عوام کےلئے ہیلنگ ٹچ ہے مگر علیحدگی پسندوں اور ملٹنٹوں کےلئے نہیں ، ان کے خلاف سخت سے سخت کارروائیاں جاری رہیں گی

CNI News Desk
the authorCNI News Desk
Current News of India (CNI) is the first news agency of Jammu & Kashmir. The agency's news reports have a massive reach as they are carried by national as well as local newspapers.

Leave a Reply