Latest News

کشتواڑ میں آر ایس ایس لیڈر پرحملہ ، ذاتی محافظ سمیت ہلاک ،حملہ آوروںنے رائفل بھی اُڑالی قصبہ میں حالات کشیدہ کرفیو کا سختی کے ساتھ نفاذ ، فوج نے سڑکوں پر فلیگ مارچ کیا ،حملہ آوروں کی بڑے پیمانے پر تلاش شروع

Web Desk

صوبہ جموں کے قصبہ کشتواڑ میں نامعلوم بندوق برداروں نے آر ایس ایس لیڈر پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں آر ایس ایس لیڈر شدید طور پر زخمی ہوا جو بعد میں زخموں کی تاب نہ لاکر ہسپتال میں دم توڑ بیٹھا جبکہ اس کا ذاتی محافظ موقعے پر ہی ہلاک ہوگیا ، حملہ آوروں نے اپنے ساتھ پی ایس او کی سروس رائفل بھی اُڑالی ۔ اس واقعہ کے بعد قصبہ میں حالات سخت کشیدہ ہوگئے اور قصبہ میںغیر معائینہ مدت کےلئے کرفیو کا نفاذ عمل میں لایا گیا ہے ۔ اس دوران فوج کو بھی بلایا گیا۔ کرنٹ نیوز آف انڈیاکے مطابق صوبہ جموں کے قصبہ کشتواڑ میں اُس وقت حالات کشیدہ ہوگئے اور انتظامیہ کو کرفیو کاسختی سے نفاذ عمل میں لانا پڑا جب آر ایس ایس کے لیدر چندرا کات سنگھ اور اُس کے ذاتی محافظ پر اندھا دھند گولیاں برسائیں جس کے نتیجے میں مذکورہ آر ایس ایس لیڈر زخمی ہوا جبکہ اس کا محافذ موقعے پر ہلاک ہوگیا ۔ آر ایس ایس لیڈر ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ بیٹھا ذرائع کے مطابق حملہ آوروں نے مذکورہ پی ایس او کی سروس رائفل بھی اُڑالی ہے ۔ ذرائع کے مطابق کشتواڑ میں منگل کو آر ایس ایس کے لیڈر پر بندوق برداروں کے حملے کے بعد حکام نے کرفیو نافذ کردیا۔حکام نے کہا کہ یہ اقدام ”امن و قانون کی صورتحال بنائے رکھنے کیلئے اٹھایا گیا ہے“۔دائیں بازو آر ایس ایس کا ایک لیڈرآج کشتواڑ میں ا ±س وقت زخمی ہوگیا جب نامعلوم بندوق برداروں نے ا ±س پر گولیاں چلائیں۔اس حملے میں مذکورہ لیڈر کا ایک محافظ ہلاک ہوگیا۔پولیس ذرائع کے مطابق آر ایس ایس لیڈر چندراکانت سنگھ اور ا ±س کے محافظ کو ضلع اسپتال کشتواڑ میں گولیوں کا نشانہ بنایا گیا۔اس حملے میں سنگھ بری طرح زخمی جو بعد میں ہسپتال میں دم توڑ بیٹھاجبکہ ا ±س کا ایک محافظ موقع پر ہی ہلاک ہوگیا۔حکام کے مطابق سنگھ محکمہ صحت میں ملازمت بھی کرتا ہے اور آجکل وہ ضلع اسپتال کشتواڑ میں ہی تعینات ہے جہاں ا ±س پر حملہ ہوا۔حکام کے مطابق اس حملے کے بعد کشتواڑ اور ڈوڈہ میں کشیدگی کو دیکھتے ہوئے انٹر نیٹ سروس بھی معطل کی گئی ہے اور حالات پر قریبی نظر رکھی جارہی ہے۔جبکہ قصبہ میں فو ج بھی بلائی گئی ہے جس نے اہم سڑکوں اور چوراہوں پر فلیگ مارچ شروع کردیا ہے اور کسی بھی شخص کو چلنے پھرنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے ۔ واضح رہے کہ گذشتہ برس کے ماہ نومبر میں بھی بی پی کے ایک لیڈر انل پریہار اور اس کے بھائی پر حملہ ہوا تھا جس میں بی جے پی لیڈر کی موت ہوئی تھی اور قصبہ میں حالات کشیدہ ہوگئے

CNI News Desk
the authorCNI News Desk
Current News of India (CNI) is the first news agency of Jammu & Kashmir. The agency's news reports have a massive reach as they are carried by national as well as local newspapers.

Leave a Reply